صوبے میں 6259 یونین کونسلوں کی 914 شہری اور 5 ہزار 345 وارڈ پر 29 مئی کو بلدیاتی الیکشن ہوگی 35 لاکھ 52998ووٹرز ہیں‘صوبائی الیکشن کمیشن

کوئٹہ(ثبوت نیوز)بلوچستان میں 29 مئی کو ہونے والے بلدیاتی الیکشن کی تیاریاں مکمل کرلی گئی 32 صوبے کے سات اضلاع کو انتہائی حساس قرار دیا گیا یے جہاں ایف سی اور فوج تعینات ہوگی 914 شہری جبکہ پانچ ہزار سے زائد دہی وارڈز قائم کی گئی ہیں

مقامی حکومتوں کے الیکشن میں پہلی بار 132 خواتین جنرل نشتوں پر انتخاب لڑرہی ہیں‘ان خیالات کا اظہار انہوں نے صوبائی الیکشن کمشنر فیاض حسین مراد نے اپنے دفتر میں میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ صوبے میں 6259 یونین کونسلوں کی 914 شہری اور پانچ ہزار تین سو پنتالیس وارڈ پر 29 مئی کو بلدیاتی الیکشن کرایا جارہا ہے

35 لاکھ باون ہزار تین اٹھانوے ووٹرز ہیں جن میں خواتین ووٹرز کی تعداد پندرہ لاکھ 46 ہزار ایک سو ایک سو چوبیس جبکہ مرر ووٹرز کی تعداد بیس لاکھ چھ ہزار دو سو چوہتر ہے جن کیلئے پانچ ہزار دو سو چھبیس پولنگ اسٹیشن قائم کئے گئے ہیں

بلوچستان کے سات اضلاع انتہائی حساس قرار دئے گئے ہیں جنکے دو ہزار چونتیس پولنگ اسٹیشن انتہائی حساس جبکہ 1974 حساس اور بارہ سو اٹھارہ نارمل پولنگ اسٹیشن ہیں انتہائی حساس قرار دئے جانے والے پولنگ اسٹیشنز ہر ایف سی اور فوج تعینات ہوگی

پانچ ہزار دو سو چھبیس پولنگ اسٹیشنز میں سے مرد ووٹرز کیلئے پانچ سو چھہتر خواتین کے پانچ سو باسٹھ جبکہ چار ہزار اٹھاسی مشترکہ پولنگ اسٹیشن قائم کئے گئے ہیں۔ الیکشن کیلئے پانچ ہزار دو سو چھبیس پولنگ افسران بارہ ہزار دو سو انیس اسسٹنٹ پرائیزنگ افسران تعینات ہیں صوبے کے 32 اضلاع میں 25 ہزار سات سو اکتالیس کاغذات نامزدگی جمع کرائے گئے ہیں

شہری واڈر میں ہانچ ہزار دو سو انتالیس دہی واڈز میں انیس ہزار آٹھ سو دو امیدوار میدان میں ہیں کاغذات نامزدگی منظور ہونے اور مسترد ہونے کے بعد 23 ہزار آٹھ سو پنتیس امیدوار الیکشن لڑنے کے اہل قرار دئے گئے ہیں انتخابی فہرستوں کی تیاری مکمل ہوچکی ہے سبی اور کیچ کے اضلاع میں جنرل نشتوں پر الیکشن لڑنے والی خواتین امیدواروں کی تعداد زیادہ ہے۔