نئے آرمی چیف کی تعیناتی پاکستان کا اندرونی معاملہ ہے ٹی ٹی پی جیسے خطرات سے نمٹنا پاکستان اور امریکا کا مشترکہ مفاد ہے، محکمہ خارجہ امریکا

واشنگٹن (ثبوت نیوز) امریکا نے کہا ہے کہ نئے آرمی چیف کی تعیناتی پاکستان کا اندرونی معاملہ ہے، خطے میں استحکام کے لیے پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرتے رہیں گے۔ ٹی ٹی پی جیسے خطرات سے نمٹنا پاکستان اور امریکا کا مشترکہ مفاد ہے

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی محکمہ خارجہ نے اپنے بیان میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے حکومت کے ساتھ معاہدہ توڑنے پر کہا کہ ٹی ٹی پی جیسے خطرات سے نمٹنا پاکستان اور امریکا کا مشترکہ مفاد ہے

بیان میں کہا کہا گیا ہے کہ انسداد دہشت گردی کے لیے پاکستان کے ساتھ مضبوط شراکت داری چاہتے ہیں جبکہ ہر قسم کی دہشت گردی سے مقابلے کے لیے پاکستانی حکومت کی کوششوں کو سپورٹ کرتے ہیں۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ 2 دہائیوں میں پاکستانی عوام دہشتگرد حملوں سے بری طرح متاثر ہوئے ہیں، علاقائی اور عالمی دہشتگردی کے خلاف تعاون اور کوششوں کی امید رکھتے ہیں۔پاکستان کی روسی تیل خریدنے کی کوشش پر امریکی محکمہ خارجہ نے کہا کہ پاکستان کی تیل کی ضروریات کو

سمجھ سکتے ہیں، ہر ملک کو اپنے حالات اور تیل کی ضروریات کے مطابق فیصلہ لینا ہوگا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکہ نے روس پر تیل برآمد کرنے کے لئے اب تک پابندیاں نہیں لگائیں، اتحادیوں کے ساتھ مل کر مہنگے تیل کے عالمی منڈی پر اثرات سے نمٹنے کی کوشش کر رہے ہیں۔