کوئٹہ کے نواحی علاقے بلیلی کے قریب خودکش دھماکہ خاتون سمیت3 افراد جاں بحق 19 پولیس اہلکار سمیت 6 سویلین زخمی ہو گئے ‘وزیراعلیٰ بلوچستان کا واقعہ کی مذمت وزیرداخلہ نے واقعہ کی رپورٹ طلب کر لی

کوئٹہ(ثبوت نیوز) صوبائی دار الحکومت کوئٹہ کے نواحی علاقے بلیلی کے قریب پولیس کانسٹیبلری پر خودکش دھماکہ ‘دھماکے کے نتیجے میں اب تک 3 افراد جاں بحق خواتین سمیت 28 افراد زخمی ہو گئے

ڈی آئی جی کوئٹہ کے مطابق کوئٹہ کے علاقے بلیلی میں ہونے والے خود کش حملے میں پولیس اہلکار اور ایک بچہ جاں بحق جبکہ 22 پولیس اہلکاروں سمیت 28افراد زخمی ہو گئے۔

خود کش دھماکے میں بلوچستان کانسٹیبلری کے ٹرک کو نشانہ بنایا گیا، دھماکے کے باعث قریب سے گزرنے والی گاڑیاں بھی زد میں آگئی اور علاقے میں خوف وہراس پھیل گیا

دھماکے میں پولیس اہلکاروں سمیت عام شہری بھی زخمی ہوئے، دھماکے میں زخمی ہونے والے پولیس اہلکاروں اور دیگر افراد کو سول اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے جن کو مزید طبی امداد فراہم کی جارہی ہے

دھماکے میں بلوچستان کانسٹیبلری کے ٹرک کو نشانہ بنایا گیا، 20 سے 25 کلو گرام دھماکا خیز مواد استعمال کیا گیا دھماکے کے بعد پولیس اور بم ڈسپوزل کو موقع پر طلب کر لیا گیا ہے، جائے وقوعہ کا محاصرہ کر کے شواہد اکٹھے کیے جا رہے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ خود کش حملے میں 20 سے 25 کلو گرام دھماکا خیز مواد استعمال کیا گیا، پولیس اہلکار ٹرک پر پولیو ڈیوٹی کے لیے جا رہے تھے۔

اب تک اطلاعا کے مطابق دھماکے میں 19 پولیس اہلکاران پولیس اے ایس آئی محمد ابراہیم‘سکندر خان ‘منظور احمد‘محمد نواز‘گل جان ،بہرام خان ،عبدالحق،فہم خان ،جمیل احمد ،رحیم اکر،عامر شیخ،ضیاء الرحمن ،ہارون نصیر ،قادر بخش،محمد حیات،غلام حیدر محمد نعیم ،نیال الدین ،شاہنواز

جبکہ دھماکے میں 6 سول افراد ظفر خان ،عمر خان اور نادیہ سمیت دیگر زخمی ہو گئے جبکہ اطلاعات کے مطابق 3 افراد خاتون زینب،محمد ابراہم اور عدنان جاں بحق ہوگئے ہیں

دریں اثنائوزیراعلیٰ بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو‘صوبائی وزیر داخلہ میر ضیاء لانگو‘صوبائی وزیراء اراکین اسمبلی اور دیگر نے کوئٹہ میں بلو چستان کانسٹیبلری کے ٹرک کے قریب دھماکے کی مزمت کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کی بزدلانہ کاروائی میں قیمتی جانی نقصان پر افسوس کا اظہار کرتے ہیں

زخمیوں کو علاج معالجہ کی بہترین سہولتوں کی فراہمی کی ہدایت جاری کر دی دہشت گردوں نے سیکیورٹی فورس پر بزدلانہ حملہ کیا۔ دہشت گردی کی کاروائیوں سے امن کے قیام کے ہمارے عزم کو کمزور نہیں کیا جاسکتا

سیکیورٹی فورسز کے حوصلے بلند اور عزم مضبوط ہے واقعہ میں ملوث عناصر اور انکے سرپرستوں کو قانون کی گرفت میں لایا جاۓ گا وزیراعلیٰ کا شہداء کے خاندانوں سے تعزیت و ہمدردی کا اظہار اورزخمیوں کی جلد صحتیابی کی دعاکی گئی