جمعیت علماء اسلام بلوچستان کے صوبائی مجلس عاملہ اور پارلیمانی گروپ کا مشترکہ اجلاس جمعیت علماء اسلام نیب ترمیمی آرڈنینس کو مکمل مسترد کرتی ہے

کوئٹہ(ثبوت نیوز)جمعیت علماء اسلام بلوچستان کے صوبائی مجلس عاملہ اور پارلیمانی گروپ کا مشترکہ اجلاس صوبائی امیر مولانا عبدالواسع کی ہدایت پر قائمقام صدر مولانا محمد سرور خان موسیٰ خیل کی صدارت میں ہوا اجلاس میں مجلس عاملہ کے اراکین مولانا عبدالرحمن رفیق‘حافظ حسین احمد شرودی‘مولوی خورشید احمد‘میر نظام الدین لہڑی‘سید عبدالواحد آغا‘حاجی عنایت اللہ بازئی‘حاجی دین محمد سیگی‘میر عثمان بادینی

حاجی رحمت اللہ دولت زئی‘شاکر خان ایڈووکیٹ‘پارلیمانی اراکین میر یونس عزیز زہری‘سید عزیز اللہ آغا‘ اصغر خان ترین‘ میر زابد ریکی‘مکھی شام لال نے شرکت کی اجلاس میں دیگر امور کے علاوہ تین اہم ایجنڈے زیر غور لائے گئے

مرکزی امیر و سربراہ پی ڈی ایم مولانا فضل الرحمن کی جانب سے مہنگائی او ر موجودہ حکومت کی پالیسیوں کے خلاف صوبے بھر میں احتجاجی مظاہروں کا اعلان صوبے کی سیاسی صورتحال تحریک عدم اعتماد اور ہرنائی میں ہونے والے زلزلے سے شہداء و زخمی ہونے والے افراد میں جماعت کی طرف سے قائم ریلیف فنڈ کی تقسیم زیر غور لائے گئے

مولانا محمد سرور موسیٰ خیل اور پارلیمانی رکن میریونس عزیز زہری نے تین ایجنڈوں سے شرکاء کے اجلاس کو آگاہ کیا اور تمام پارلیمانی اراکین مجلس عاملہ اور پارلیمان نے زیر حاصل بحث کی انہوں نے کہاکہ اس وقت ملک تاریخ کی بدترین دور سے گزررہا ہے

ملک میں اس وقت عوام انتہائی افراتفری اور پریشانی کے عالم میں ہے جمعیت علماء اسلام کے سربراہ نے کچھ عرصے قبل جو فرمایا تھا کہ عمران خان ملک کو یہودی ایجنڈے کے تابع کرکے اقتصادی دفاعی اور تمام شعبوں میں برباد کرنے کیلئے مسلط کیاگیا ہے

وہ تما م باتیں حرف بحرف سچ ثابت ہورہی ہے اس سلسلے میں مہنگائی‘ بے روزگاری کے خلاف صوبے بھر میں احتجاجی مظاہرے ہورہی ہے جب تک عوام کو ریلیف فراہم نہیں کیا جاتا ہمارا احتجاج جاری رہے

گا مرکزی سرکلر کے مطابق ہر ضلع میں ضلعی سطح پر پی ڈی ایم میں شامل تمام جماعتوں کا اجلاس بلا کر 15دن یعنی دو ہفتوں کا شیڈول طے کریں اور مہنگائی کے خلاف احتجاج ہونا چاہئے

انہوں نے کہاکہ مظاہروں میں جمعیت اور عوام کی شرکت یقینی بنانا ہے انہوں نے کہاکہ جام حکومت کے خلاف تحریک عدم اعتماد کی تحریک میں جمعیت علماء اسلام بھرپو ر کردار ادا کرے گی اور بلوچستان کے عوام کی حقوق کیلئے جمعیت ہر فورم پر آواز اٹھا کر جنگ لڑے گی

اور جمعیت علماء اسلام جام حکومت کے ناروا اقدامات سے بلوچستان کے عوام کو نجات دلائے گی گزشتہ دنوں ضلع ہرنائی ہونے والے زلزلے میں شہید اور زخمی ہونے والے افراد کے ساتھ ہمدردی کیلئے مولانا عبدالواسع کی ہدایت پر صوبائی سطح پر ریلیف فنڈز فراہم کیا

صوبے کے تمام اضلاع میں ریلیف فنڈز میں نقد رقم کی شکل میں بھرپور حصہ ڈالا اور صوبائی جماعت کی جانب سے مولانا سرور کی قیادت میں وفد نے ہرنائی جا کر ضلعی جماعت کی مشاورت سے ہرنائی میں ایک تقریب میں شہید ہونے والے افراد کے لواحقین کو انسانی ہمدردی کی بنیاد پر نقد رقم مالی امداد فراہم کی جمعیت علماء اسلام نیب ترمیمی آرڈنینس کو مکمل مسترد کرتی ہے

اور اس ادارے کو ہمی شہ اپوزیشن کے خلاف استعمال کیاگیا موجودہ حکومت کی نگرانی میں بلدیاتی انتخابات کو مسترد کرتے ہیں ملک میں صاف و شفاف قومی اور صوبائی اسمبلیوں کے پوری انتخابات کا مطالبہ کرتے ہیں۔