تمام طالبات تسلیم کرلیے تھے‘ ڈاکٹرز ہٹ دھرمی کرکے قانون کو ہاتھ میں لینا چاہتے ہیں ریڈ زون پر احتجاج مناسب نہیں تھاڈاکٹرز کے تمام مطالبات مان لیئے ہیں‘وزیر صحت بلوچستان

کوئٹہ/چاغی(ثبوت نیوز) صوبائی وزیر صحت سید احسان شاہ نے کہا ہے کہ ڈاکٹروں کے تمام مطالبات تسلیم کرلیے گئے ہیں مگر ڈاکٹروں نے ریڈزون میں داخل ہو کر خود قانون کو ہاتھ میں لیکر ایسے حالات پیدا کردئیے

صوبائی حکومت ڈاکٹروں کے جائز مطالبات تسلیم کرنے کیلئے شروع دن سے کوششیں کررہی ہے مگر ڈاکٹرز ہٹ دھرمی کرکے قانون کو ہاتھ میں لینا چاہتے ہیں‘ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا

سید احسان شاہ نے کہاکہ احتجاج پر بیٹھے ڈاکٹرز کے ساتھ سنجیدگی سے مزکرات جاری تھا انکے ساتھ میٹنگ بھی رکھا تھا ریڈ زون پر احتجاج مناسب نہیں تھاڈاکٹرز کے تمام مطالبات مان لیئے ہیں تنخواہ بڑھانے

پر اتفاق نہیں ہوا تھا اس وقت اسسٹنٹ کمشنر 17 گریڈ پچاس ہزار ڈاکٹرز 70ہزار تنخواہ لے رہے ہیں انہوں نے کہاکہ ڈاکٹرز کے تنخواہ بڑھانے سے سالانہ فنانس پر 7 ارب روپے کا بوجھ پڑے گا

محکمہ صحت بلوچستان کا سالانہ بجٹ 45 ارب ہیں اس وقت ہمارے پاس اتنی بجٹ نہیں ہے ہم تنخواہ بڑھائے البتہ درمیانی راستہ نکال دینگے اس وقت ڈاکٹروں کی احتجاج سے مریض پریشان ہے ڈاکٹرز ڈیوٹی نہ دینے کے باوجود تنخواہ لے رہے ہیں

مریضوں کے ساتھ زیادتی ہے ہم احتجاج کرنے والے ڈاکٹروں کے ساتھ پہلے بھی مذاکرات کررہے تھے اب بھی جاری رکھیں گے.