کوئٹہ‘ واسا اور ٹینکر مافیا کے بیٹھک ٹیوب ویل مصنوعی طور پر خراب علمدارروڈ‘طوغی روڈ‘سمنگلی رود‘ سریاب روڈ‘ کاسی روڈ سمیت مختلف علاقے پانی سے محروم

کوئٹہ( ثبوت نیوز)صوبائی دارالحکومت کوئٹہ کے مختلف علاقوں میں گرمی آنے سے قبل واسا اور ٹینکر مافیا نے بیٹھک قائم کرکے مختلف علاقوں میں ٹیوب ویل کو مصنوعی طور پر خراب کرکے عوام کو ٹینکر مافیا کے رحم و کرم پر چھوڑدیا

جس سے عوام بڑے داموں میں پانی خریدنے پر مجبور ہیں واضح رہے کہ کوئٹہ کے مختلف علاقوں علمدارروڈ‘طوغی روڈ‘سمنگلی رود‘ سریاب روڈ‘ کاسی روڈ‘ پشتون آباد‘مال باغ سمیت دیگرعلاقوں میں محکمہ واسا کے اہلکاروں اور ٹینکر مافیا نے گٹھ جوڑ کرکے ایک بار پھر عوام کو سرکاری پانی سے دور کرنے کیلئے مختلف علاقوں میں ٹیوب ویل کو مصنوعی طور پر ناکارہ بنا کر عوام کو ٹینکر مافیا کے حوالے کردیا

اور اس وقت فی ٹینکر 15سوسے 2ہزر روپے تک فروخت کیا جارہا ہے کہ جب بھی گرمی کا موسم شروع اور پانی کی مانگ میں اضافہ ہوتا ہے تو محکمہ واسا عوام کی سہولت کی بجائے ٹینکر مافیا کے ساتھ ملکر کچھ لو اور کچھ دو کی پالیسی اختیار کی جاتی ہے

واسا کے اس ناروا رویہ سے غریب لوگ ایک طرف روز مرہ اشیاء پورا نہیں کرسکتے دوسری جانب پانی کی رقم بھی ان پر اوپر مسلط ہوتے ہیں جس سے وہ انتہائی مشکلات کا شکار ہو جاتے ہیں عوامی حلقوں نے حکومت وقت اور خاص کر چیف جسٹس آف پاکستان سے مطالبہ کردیا کہ کوئٹہ شہر میں پانی کی مد میں سالانہ اربوں روپے خرچ ہوتے ہیں لیکن عوام اس سے محروم ہو تے ہیں نوٹس لیکر محکمہ واساسے جواب طلبی کی جائے۔